حرمت رسولﷺ میں یورپی عدالت کا مبارک فیصلہ

حرمت رسولﷺ میں یورپی عدالت کا مبارک فیصلہ

سٹراسبرگ( 24نیوز )مسلمانوں کو یورپی عدالت میں فتح مل گئی،نبی مہربانﷺکی شان میں گستاخی کو آزادی اظہار رائے سے تجاوز قرار دیدیا گیا۔
یورپی یونین کی عدالت برائے انسانی حقوق (ای ایچ سی آر) نے کہا ہے کہ پیغمبر اسلامﷺ کی توہین آزادیِ اظہار کی جائز حدوں سے تجاوز کرتی ہے اوراس کی وجہ سے تعصب کو ہوا مل سکتی ہے اور اس سے مذہبی امن خطرے میں پڑ سکتا ہے۔

یہ فیصلہ عدالت نے گزشتہ روز پیغمبرِ اسلام ﷺ کے بارے میں توہین آمیز کلمات کہنے والی آسٹریا سے تعلق رکھنے والی ای ایس نامی خاتون کے خلاف سزا کے فیصلے کی اپیل پر صادر کیا،عدالت نے کہا کہ ای ایس کے خلاف فیصلہ ان کے بنیادی انسانی حقوق کی خلاف ورزی نہیں ہے۔

ضرور پڑھیں یاد رہے ای ایس نامی خاتون نے 2008 اور 2009 میں”اسلام کے بارے میں بنیادی معلومات‘ ‘کے عنوان کے تحت مختلف تقاریر میں پیغمبرِ اسلامﷺ کے بارے میں چند کلمات ادا کیے تھے جن کی پاداش میں ان پر ویانا کی ایک عدالت میں مقدمہ چلا اور عدالت نے انھیں فروری 2011 میں مذہبی اصولوں کی تحقیر کا مجرم قرار دیتے ہوئے 480 یورو کا جرمانہ، بمع مقدمے کا خرچ، عائد کر دیا۔ اس فیصلے کو آسٹریا کی اپیل کورٹ نے بھی برقرار رکھا تھا-

2013 میں سپریم کورٹ نے بھی اس مقدمے کو خارج کر دیا تھا،اب ای سی ایچ آر نے کہا ہے کہ آسٹریا کی عدالت کا فیصلہ ‘مذہبی امن و امان برقرار رکھنے کا جائز مقصد ادا کرتا ہے،یہ فیصلہ ججوں کے سات رکنی پینل نے دیا۔

خیال رہے یورپی ممالک میں توہین ِ رسالت کے واقعات پیش آتے رہے ہیں جن کا مسلم دنیا میں شدید ردِ عمل سامنے آیا ہے اور اس دوران کئی افراد اپنی جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں،ملعون سلمان رشدی کی متنازع کتاب پر ایران کے آیت اللہ خمینی نے موت کا فتویٰ جاری کیا تھا،حال ہی میں نیدر لینڈز کے سیاست دان گیرٹ وائلڈرنے پیغمبر اسلامﷺ اور قرآن مجید کی تعلیمات کیخلاف مہم چلائی اور توہین آمیز خاکوں کے مقابلوں کا اعلان بھی کیا جس کیخلاف پاکستان سمیت دنیا بھر میں مظاہرے کیے گئے،حکومت پاکستان نے اقوام متحدہ میں آواز اٹھائی۔

2014 میں فرانس کے رسالے چارلی ایبڈو نے پیغمبرِ اسلامﷺ کے خاکے شائع کیے تھے جس پر مسلم دنیا میں غم و غصے کا اظہار کیا گیا تھا اور کئی مسلمان ملکوں میں اس کے خلاف مظاہرے ہوئے تھے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Send this to a friend